خان نااہلی، بنچ ٹوٹ گیا

اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کو آئین کے آرٹیکل 62 کے تحت بطور رکن قومی اسمبلی نااہل قرار دینے اور وزارت عظمی کا حلف اٹھانے سے روکنے کی درخواست کی سماعت سے معذرت کر لی ۔ نئے بنچ کی تشکیل کے لیے معاملہ چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ کو بھجوا دیا گیا ۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے شہدا فاؤنڈیشن کے حافظ احتشام کی جانب سے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی نااہلی کی درخواست پر ابتدائی سماعت کی اور درخواست کے قابل سماعت ہونے پر دلائل سنے ۔ درخواست گزار نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ عمران خان آئین کے آرٹیکل 62 کے تحت رکن قومی اسمبلی بننے کے اہل نہیں۔ انہوں نے اپنے کاغذات نامزدگی میں اپنی بیٹی ٹیریان جیڈ وائٹ کا ذکر نہیں کیا ۔ امریکی عدالت عمران خان کو ٹیریان کا والد قرار دے چکی ہے جس سے عمران خان نے کبھی انکار بھی نہیں کیا۔ ریحام خان نے بھی اپنی کتاب میں عمران خان پر سنگین نوعیت کے الزامات عائد کیے ہیں۔ ایسے شخص کا وزیراعظم بننا ملکی سالمیت اور وقار کے خلاف ہے۔ عدالت نے دلائل سننے کے بعد درخواست کے قابل سماعت ہونے پر فیصلہ محٖوظ کیا تاہم بعد میں درخواست پر سماعت سے معذرت کر لی ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے