یمن میں اسکول بس پر سعودی بمباری

خانہ جنگی سے متاثر ملک یمن میں سعودی عرب کے سربراہی میں اتحادی افواج کے جنگی طیاروں نے بمباری کی ہے جس میں سینکڑوں شہری نشانہ بن گئے ہیں ۔ الجزیرہ ٹی وی کے مطابق بمباری سے ایک اسکول بس بھی نشانہ بن گئی جس میں سوار 50 بچے جاں بحق ہوگئے ۔

عالمی اخبارات اور ٹی وی چینلز پر اسکول بس کے بچوں کی زخمی حالت کی تصاویر اور فوٹیج کی وجہ سے دنیا بھر میں اس واقعہ کی مذمت کی جا رہی ہے ۔ پاکستان میں سوشل میڈیا پر اس خبر کو لے کر سخت غم و غصے کا اظہار کیا جا رہا ہے اور اس کی ایک وجہ یہ بھی بتائی جا رہی ہے کہ ملکی فوج کے سابق سربراہ راحیل شریف بھی اس وقت سعودی اتحادی فوج سے منسلک ہیں ۔

واضح رہے کہ پاکستان کی سپریم کورٹ نے بھی ریٹائرڈ جنرل راحیل شریف کی سعودی عرب میں نوکری پر نوٹس لے کر حکومت سے پوچھا تھا کہ کیا انہوں نے اجازت لی تھی ۔ عدالت کو وزارت دفاع کی جانب سے بتایا گیا تھا کہ راحیل شریف نے اپنے سابق ادارے سے اجازت لی تھی ۔

متعلقہ مضامین