زرداری نے ضمانت کروا لی

سابق صدر آصف زرداری نے اسلام آباد ہائیکورٹ سے حفاظتی ضمانت حاصل کر لی تاکہ انہیں کراچی پہنچنے اور عدالت پیش ہونے سے قبل گرفتار نہ کیا جا سکے ۔

گزشتہ روز کراچی کی بینکنگ عدالت نے جعلی بینک اکاؤنٹس سے منی لانڈرنگ کے مقدمے میں سابق صدر آصف زرداری سمیت کیس میں نامزد 15 مفرور ملزمان کے ناقابل ضمانت وارنٹ جاری کیے تھے ۔

سابق صدرآصف علی زرداری نے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری ہونے کے بعد حفاظتی ضمانت کے لیے اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی ۔ سینئر وکلا اعتزازاحسن اور لطیف کھوسہ کے توسط سے دائر درخواست میں استدعا کی گئی کہ ٹرائل کورٹ میں پیش ہوناچاہتا ہوں، گرفتاری کا خدشہ ہے اس لیے حفاظتی ضمانت دی جائے۔ درخواست میں مزید استدعا کی گئی کہ ایف آئی اے کی انکوائری میں پیش ہونے کے لیے بھی ضمانت دی جائے۔

سابق صدر کی درخواست سماعت کے لیے آج ہی مقرر کی گئی اور جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب نے اِن چیمبر سماعت کی ۔ آصف علی زرداری عدالت میں پیش ہوئے، ان کی صاحبزادی آصفہ بھٹو زرداری بھی ان کے ہمراہ تھیں ۔ جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب نے مختصر سماعت کے لیے سابق صدر کی حفاظتی ضمانت منظور کرلی۔ عدالت نے آصف زرداری کو متعلقہ ٹرائل کورٹ سے رجوع کرنے کا حکم دیا ہے۔

یاد رہےکہ جعلی بینک اکاؤنٹس سے منی لانڈرنگ کے کیس میں آصف زرداری اور فریال تالپور بھی نامزد ہیں جب کہ نجی بینک کے سربراہ حسین لوائی اور طحہٰ رضا جوڈیشل ریمانڈ پر جیل میں ہیں، اس کے علاوہ فریال تالپور سمیت کیس کے 4 ملزمان نے گرفتاری سے بچنے کے لیے عبوری ضمانت لے رکھی ہے، ایف آئی اے نے کیس میں سابق صدر آصف زرداری سمیت 20 ملزمان کو مفرور قرار دیا ہے۔

متعلقہ مضامین