کیلے فروش بچے کیلئے حکومتی امداد

پنجاب کی صوبائی حکومت نے شیخوپورہ میں دھرنا دینے والے مظاہرین کے ہاتھوں لٹنے والے کیلے فروش بچے کو مالی امداد فراہم کر دی ہے ۔ وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے اس کیلئے سوشل میڈیا کے ذریعے پنجاب حکومت سے درخواست کی تھی ۔

یاد رہے کہ اس سے قبل کیلے لوٹنے والے گروہ نے سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو پوسٹ کر کے یہ تاثر دیا تھا کہ انہوں نے کیلے خریدے ہیں لوٹے یا چرائے نہیں تاہم سوشل میڈیا صارفین نے کیلے فروش بچے کی تصاویر اور ویڈیوز میں مختلف بچوں کی شناخت کرکے مذہبی گروہ کے جھوٹ کو بے نقاب کیا تھا ۔

مظاہرین کی لوٹ مار کا شکار ہونے والے بچے محسن کا مختلف ٹی وی چینلز سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ منڈی سے کیلے خرید کر بتی چوک پہنچا تو مظاہرین نے اس کی ریڑھی پر دھاوا بول دیا ۔ روکنے پر میری کسی نے نہ سنی، سب کچھ چھن گیا، جب روتا ہوا گھر پہنچا تو پاپا نے کہا کوئی بات نہیں، اللہ مالک ہے ۔

محسن کے والد رمضان نے ایک ٹی وی سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ وہ رکشہ چلا کر چھ بچوں کا پیٹ پالتے ہیں، بچے میرا ہاتھ بھی بٹاتے ہیں، مظاہرین نے کیلے لوٹ کر بہت زیادتی کی تھی ۔

پنجاب حکومت کی جانب سے اسسٹنٹ کمشنر شیخوپورہ فضائل مدثر متاثرہ بچے محسن کے گھر گئے اور اسے حکومت کی جانب امدادی رقم دی ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے