فیصلے پر احتجاج کا ازخود نوٹس

سپریم کورٹ کے چیف جسٹس ثاقب نثار نے آسیہ بی بی فیصلے کے بعد ملک بھر میں احتجاج کے دوران عام شہریوں کی املاک کو نقصان پہنچنے کا نوٹس لیا ہے ۔

سپریم کورٹ نے وفاقی اور صوبائی حکومتوں سے تین دن میں تفصیلات فراہم کرنے کیلئے کہا ہے ۔ عدالت سے جاری کئے گئے اعلامیے میں مولویوں کی جانب سے ججوں کوواجب القتل اورفوج کے جرنیلوں کو اپنے سربراہ کے خلاف بغاوت پر اکسانے کا کوئی ذکر نہیں ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے