افغانستان میں 30 مارے گئے

شورش زدہ افغانستان کے مختلف صوبوں میں عسکریت پسند طالبان نے حملے کر کے 21 سے زائد پولیس اہلکاروں کو قتل کر دیا ہے ۔ حکام کے مطابق سرکاری فورسز کی جوابی کارروائیوں میں اہم طالبان کمانڈر سمیت دس عسکریت پسند مارے گئے ہیں ۔

افغانستانے سے آنے والی خبروں میں کے مطابق طالبان کے عسکری گروہ نے دعوی کیا ہے انہوں کہ شمالی اور مغربی صوبوں میں حملے کر کے درجنوں افغان سیکورٹی اہلکاروں کو قتل کر دیا ہے ۔

افغان حکام نے طالبان کے حملوں میں 21 اہلکاروں کے مارے جانے کی تصدیق کی ہے ۔ حکام نے کہا ہے کہ ان واقعات میں متعدد اہلکار زخمی بھی  ہوئے، مغربی صوبے بادغیس کے گورنر کے ترجمان جمشید شاہابی کے مطابق طالبان کے حملے میں 6 پولیس اہلکار مارے گئے جب کہ شمالی صوبے بغلان کے کونسل رکن شمس الحق نے 7  پولیس اہلکاروں کی عسکریت پسندوں کے حملے میں مارے جانے کی تصدیق کی ہے ۔

طالبان نے صوبہ تخار میں 8 پولیس اہلکاروں کو گولیاں  مار کر قتل کیا ہے جبکہ قندوز صوبے میں مختلف سیکورٹی چیک پوائنٹس پر حملوں میں متعدد پولیس اہلکار اور فوجی مارے گئے ۔ حکام کی جانب سے تصدیق کی گئی ہے جبکہ طالبان نے ان حملوں کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے مزید حملے کر کے سیکورٹی فورسز کو نشانہ بنانے کا اعلان کیا ہے ۔

دوسری جانب حکام کے مطابق بلخ صوبے میں پولیس سے جھڑپوں میں اہم طالبان کمانڈر سمیت 25 جنگجوؤں کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button