موبائل فون ٹیکس معطل

لاہور میں مقدمے کی سماعت کرتے ہوئے چیف جسٹس ثاقب نثار نے موبائل فون کمپنیز اور ایف بی آر کی جانب سے موبائل کارڈز پر وصول کیے جانے والے ٹیکسز معطل کر دیئے تاہم عدالت نے ٹیکسوں کو معطل کرنے کے احکامات پر عمل کرنے کے لیے متعلقہ حکام کو دو دن کی مہلت دیدی ہے _

چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ یہاں پر لوگوں سے لوٹ مار کی جارہی ہے _ جسٹس اعجازالاحسن نے کہا کہ ریڑھی بان سے کیسے ٹیکس وصول کیا جاسکتا ہے _

عدالت نے ہدایت کی ہے کہ جس کا موبائل فون کا استعمال مقررہ حد سے زیادہ ہے اس سے ٹیکس وصول کریں، جو صارف ٹیکس نیٹ میں نہیں آتا تو اس سے کیسے ٹیکس وصول کرسکتے ہیں، سو روپے کا کارڈ لوڈ کرنے پر 64.38 پیسے وصول ہوتے ہیں، یہ غیر قانونی ہے، عدالت نے حکم دیا ہے کہ موبائل فونز کارڈر پر ٹیکس وصولی کیلئے جامع پالیسی بنائی جائے _

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے