پورنو گرافی گروہ سرگرم ہے

پاکستان میں نوجوانوں سے جنسی زیادتی کر کے ویڈیو بنانے کا دھندہ بڑھ گیا ہے، عالمی پولیس نے پاکستانی حکام کو آگاہ کیا ہے ۔

ڈپٹی ڈائریکٹر سائبر کرائم سید شاہد حسن کی پورنو گرافی کے حوالے سے پریس کانفرنس میں راولپنڈی کے علاقے گجر خان میں پونو گرافی کا انکشاف ہوا ہے ۔ چار رکنی گروہ پونو گرافی کا ماسٹر مائینڈ نوید گرفتار کر لیا گیا ہے جس نے نوجوان سے جنسی زیادتی کرکے اسکی ویڈیو بنا کر وائرل کی تھی ۔

جنسی ویڈیو کی بنا کر متاثرہ نوجوان کو بلیک میل کرکے رقم کا مطالبہ بھی کیا گیا ۔ پورنوگرافی کی نشاندہی انٹرپول نے ایف آئی اے کو کی تھی، متاثرہ اٹھارہ برس کے نوجوان نے ہانگ کانگ میں سیاسی پناہ کی درخواست دے دی ہے ۔

گروہ کے مزید تین ملزمان کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جارہے ہیں، ملزم ابھی تک درجنوں لڑکوں سے زیادتی کرچکا ہے ،ملزم کے قبضے سے جنسی زیادتی کی ویڈیوز بھی برآمد کرلی گئ ہیں ۔

ایک ملزم دبئی فرار ہوگیا ہے جسکی گرفتاری کیلئے کاروائی جاری ہے، ویڈیوز کی فی الحال بیرون ممالک بھجوانے کی تصدیق نہیں ہوئی ہے موبائل کا فرانزک جاری ہے

مزید دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے