جج محمد بشیر باقی ریفرنس نہیں سن سکتے

احتساب عدالت اسلام آباد میں نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث نے جج محمد بشیر پر اعتراض کیا ہے جس کے بعد العزیزیہ اسٹیل مل ریفرنس کی سماعت 12 جولائی تک ملتوی کر دی گئی ۔

نواز شریف اور مریم نواز کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست دائر کی گئی جبکہ کلثوم نواز کی میڈیکل رپورٹ بھی عدالت میں پیش کی گئی ۔ وکیل خواجہ حارث نے جج سے کہا کہ آپ یہ کیس نہ سنیں آپ پہلے فیصلہ دے چکے ۔

جج نے پوچھا کہ کیا کریں آپ ہی بتائیں ۔ وکیل نے کہا کہ آپ سپریم کورٹ کو لکھیں اس معاملے پر ۔ جج محمد بشیر نے کہا کہسپریم کورٹ کی طرف سے دی گئی مدت بھی ختم ہو رہی ہے، اس متعلق خط لکھنا میرا کام ہے ۔

وکیل نے کہا کہ آپ سپریم کورٹ کے نوٹس میں یہ بات لے آئیں اور ہائی کورٹ کو بھی بتا دیں، ہمارا اعتراض ہے کہ آپ یہ کیس ہی نہیں سن سکتے ، خواجہ حارث نے کہا کہ مناسب بات یہ ہے کہ سپریم کورٹ کو خط میں آپ ان باتوں کا حوالہ بھی دے دیں، ہم تو چاہتے تھے کہ تمام ریفرنسز کا فیصلہ ایک ساتھ کر دے، نواز شریف اور مریم نواز جمعہ کی شام کو پاکستان واپس پہنچ رہے ہیں، خواجہ حارث نے کہا کہ بہتر ہے کہ سماعت کو سوموار تک کے لیے ملتوی کر دیا جائے ۔

مزید دیکھیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے