رونالڈو کا نیا فٹبال کلب

پرتگاک کے فٹبال سٹار کرسچیانو رونالڈو نے کہا ہے کہ وہ اطالوی کلب یووینٹس کی طرف سے کھیلنے کا موقع دیے جانے پر شکر گزار ہیں، ان کا کہنا تھا کہ ان کی عمر میں کھلاڑی چین یا قطر کے فٹبال کلبوں کا رخ کرتے ہیں ۔

حالیہ ورلڈکپ میں پرتگال کے کپتان 33 سالہ رونالڈو اسپین کے کلب ریال میڈرڈ کی طرف سے بطور سٹرائیکر کھیلتے تھے۔ اب ان کا ٹرانسفر 100 ملین پاؤنڈ کے عوض اطالوی کلب یووینٹس میں ہوا ہے ۔ نو سال تک ریال میڈرڈ کی طرف سے کھیلنے کے بعد رونالڈو نے کہا کہ کریئر کے اس موڑ پر یووینٹس کی طرف سے کھیلنے پر مجھے بہت خوشی ہورہی ہے ۔

اٹلی کے شہر ٹیورن میں اپنے نئے کلب کی جرسی دکھانے کی تقریب میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے رونالڈو نے کہا کہ انھیں امید ہے کہ وہ اطالوی کلب کے لیے ‘لکی سٹار’ ثابت ہوں گے ۔ رونالڈو نے کہا کہ انھیں کسی اور کلب سے کھیلنے کی پیشکش نہیں تھی ۔ رونالڈو نے  کہا کہ میں ان سارے کھلاڑیوں سے مختلف ہوں جو میری عمر میں یہ سوچتے ہیں کہ ان کا کیریئر اختتام کو پہنچ گیا ہے، میرے لیے یہ بہت جذباتی لمحہ ہے ۔

رونالڈو یووینٹس کی تاریخ میں سب سے مہنگے کھلاڑی ہیں۔ اس سے پہلے یہ اعزاز ارجنٹینا کے فارورڈ گونزالو ہیگوئن کے پاس تھا جسے خریدنے کے لیے اطالوی کلب نے 75 اعشاریہ تین ملین پاونڈ ادا کیے تھے ۔

رونالڈو مانچسٹر یونائیٹڈ سے 2009 میں ریال میڈرڈ آئے اور کلب کے لیے سب سے زیادہ 451 گول کئے ۔ اس دوران انھوں نے پانچ بار دنیا کے سب سے بہترین کھلاڑی ہونے کا ایوارڈ ‘بیلن ڈور’ بھی حاصل کیا۔ جبکہ گزشتہ پانچ سیزن میں سے چار سیزن میں رونالڈو نے میڈرڈ کو چیمپیئنز لیگ میں بھی کامیابی دلوائی اور فیفا کلب ورلڈ کپ بھی جیتا۔

 

متعلقہ مضامین