فوجی ترجمان نے قبائل کے دعوے کو جھٹلا دیا

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے ٹویٹ کر کے وزیرستان میں سیکیورٹی فورسز کی جانب سے مبینہ فائرنگ سے نوجوان کی ہلاکت کے معاملہ پر مؤقف دیا ہے ۔
ترجمان نے کہا ہے کہ حقائق جاننے کے لئے انکوائری کا حکم دے دیا گیا ہے، کسی بھی قسم کے کورٹ مارشل کی یقین دہانی نہیں کرا سکتے۔ ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا ہے کہ سیکیورٹی فورسز کی فائرنگ سے کوئی بھی ہلاک یا زخمی نہیں ہوا۔ انہوں نے لکھا ہے کہ وائس آف امریکہ، ڈیوہ ریڈیو نے اپنی غلط اور من گھڑت رپوٹٹنگ کی روایت برقرار رکھی۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق وزیرستان کے عوام پرامن اور امن برقرار رکھنے کی روایات برقرار رکھنا جانتے ہیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے