تقریر پر جج کے خلاف کارروائی کا فیصلہ

اعلی عدلیہ کے ججوں کا احتساب کرنے والے آئینی ادارے سپریم جوڈیشل کونسل نے اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس شوکت عزیز صدیقی کے خلاف کارروائی کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ پاکستان ٹوئنٹی فور کے مطابق یہ کارروائی ان کی آئی ایس آئی پر عدالتی امور میں مداخلت کے الزام لگانے پر کی جائے گی ۔

کونسل نے اپنے حالیہ اجلاس میں فیصلہ کیا ہے کہ جسٹس شوکت صدیقی کی تقریر پر ریفرنس کی کارروائی کو آگے بڑھایا جائے گا اور اس کیلئے یکم اکتوبر کو ریفرنس پر کونسل کا اجلاس ہوگا ۔ پاکستان ٹوئنٹی فور کے مطابق اٹارنی جنرل اور جسٹس صدیقی کو نوٹس جاری کر دیئے گئے ہیں اور ان کو خود یا وکیل کے ذریعے پیش ہونے کیلئے کہا گیا ہے ۔

یاد رہے کہ تقریر کے بعد جسٹس صدیقی کو اکتیس جولائی کو شوکاز نوٹس جاری کیا گیا تھا جس کے انہوں نے جواب جمع کرائے تھے ۔

جسٹس صدیقی کے خلاف سرکاری مکان کی تزئین و آرائش پر زیادہ اخراجات کرنے کا ایک ریفرنس پہلے ہی زیر سماعت ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے