انصافی حکومت تصویر سے خوفزدہ

تحریک انصاف کے وزیراطلاعات فواد چودھری نے پنجاب کے وزیراعلی سے راولپنڈی اڈیالہ جیل سے نوازشریف کی حنیف عباسی کے ساتھ تصویر کی انکوائری کیلئے کہا ہے جس کے بعد آئی جی جیل خانہ جات مرزا شاہد سلیم بیگ نے دو رکنی تحقیقاتی کمیٹی بنا دی ہے ۔

انکوائری کمیٹی میں ڈی آئی جی جیل خانہ جات ملتان ریجن ملک شوکت فیروز، اور اے آئی جی جوڈیشل ملک صفدر نواز شامل ہیں،کمیٹی کل اڈیالہ پہنچ کر معاملے کی تحقیقات کرے گی، کمیٹی کی رپورٹ پر قانون کے مطابق کارروائی ہو گی۔

ذرائع آئی جی آفس کے مطابق تصویر نوازشریف کی ضمانت کے بعد کی ہے اور جیل کے اندر کی نہیں ۔ جیل حکام کا کہنا ہے کہ سپرنٹنڈنٹ حنیف عباسی یا کسی بھی قیدی کو دفتر بلا سکتا ہے جبکہ رہائی پر مٹھائی کا آنا معمول کی بات ہے۔

جیل حکام کا کہنا ہے کہ صرف موبائل کیمرے کے سپرنٹنڈنٹ آفس تک جانے کی انکوائری کی جائے گی ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے