مشرف کے کمر درد کا علاج کرائیں گے

سپریم کورٹ میں این آر او سے قومی خزانے کو نقصان کے خلاف درخواست کی سماعت کے دوران پرویز مشرف کے وکیل نے میڈیکل رپورٹ چیمبر میں پیش کرنے کیلئے مہلت طلب کی ہے ۔
چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے سماعت کی ۔ چیف جسٹس نے پوچھا کہ پرویز مشرف کی طرف سے کیا پوزیشن ہے؟ پاکستان ٹوئنٹی فور کے مطابق وکیل اختر شاہ نے کہا کہ انہوں نے یقین دہانی کرائی ہے کہ آئیں گے، مشرف کو سیکورٹی اور میڈیکل ایشوز ہیں، قابل ضمانت مقدمات میں مفرور قرار دیا گیا ۔
چیف جسٹس نے کہا کہ ملک کی سب سے بڑی عدالت ان کو یقین دہانی کراتی ہے، مشرف آئیں کوئی گرفتار نہیں کرے گا ۔ کہیں ایسا نہ ہو کہ کہ مشرف کو ایسے حالات میں پاکستان آنا پڑے جو ان کے لئے گریس فل نہ ہو، ان کو کمر درد ہے، چک تو مجھے بھی پڑی ہوئی ہے، ایک وکیل صاحب کو چک پڑی ہوئی ہے وہ جھک نہیں سکتے، چیف جسٹس نے کہا کہ پرویز مشرف کو کمر کا مرض لاحق ہے تو یہاں آئیں علاج کرائیں گے،

چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ چک شہزاد فارم ہاوس صفائی ستھرائی کے لئے نعیم بخاری صاحب کو بھیجیں گے ۔ وکیل نے کہا کہ فارم ہاؤس کو گھر قرار دیا جائے، ان کی حالت زیادہ اچھی نہیں، ڈاکٹر نے معائنہ کیا ہے رپورٹ آئے گی تو چیمبر میں پیش کرنا چاہوں گا اس کیلئے مہلت دی جائے ۔ سماعت گیارہ اکتوبر تک ملتوی کر دی گئی ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے