کرائم سین کی تصاویر

مولانا سمیع الحق کو بحریہ ٹاؤن کے جس گھر میں قتل کیا گیا اس کی ملکیت کے بارے میں تاحال کوئی حتمی دستاویز دستیاب نہیں ہو سکی ۔ مولانا کے بعض قریبی رفقا کا دعوی ہے کہ یہ ملک ریاض کا دیا گیا ہے جبکہ خفیہ اداروں کے کچھ ہرکارے کہتے ہیں کہ یہ گھر سیف ہاؤس کے طور پر بھی استعمال ہوتا رہا ہے ۔

خفیہ اداروں کے ہرکاروں کے دعوے کو کرائم سین سے ملنا والا مواد بھی تقویت دیتا ہے ۔ تفتیش کاروں کے مطابق مولانا کے سیکرٹری کا تعاون درست تفتیش اور قاتلوں کی نشاندہی میں مددگار ہو سکتا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے