نیوزی لینڈ مشکلات کا شکار

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے مابین تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز کا آخری میچ ابوظہبی میں کھیلا جا رہا ہے جس میں نیوزی لینڈ کی ٹیم مشکلات کا شکار ہے جس کے سات بلے باز پویلین لوٹ چکے ہیں اور اسکور بورڈ پر دو سو 50 رنز بھی نظر نہیں آ رہے ۔ تیسرے میچ میں نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا ہے ۔

پاکستان کو پہلی کامیابی جلد ہی مل گئی جب اپنا پہلا ٹیسٹ میچ کھیلنے والے فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی نے لیتھم کو ایل بی ڈبلیو آؤٹ کر دیا۔ انھوں نے صرف چار رنز بنائے ۔ یہ شاہین شاہ آفریدی کی پہلی ٹیسٹ وکٹ تھی۔ یاسر شاہ نے جیت راول کو 35 کے انفرادی سکور پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ کرکے پاکستان کو دوسری کامیابی دلائی ۔

یاسرشاہ کی اگلی ہی بال پر روس ٹیلر بغیر کوئی رن بنائے بولڈ ہوگئے ۔ کھانے کے وقفے سے چند لمحے قبل یاسر شاہ نے ہیری نکولس کو بھی بولڈ کر دیا، وہ صرف ایک رن بنا سکے۔

چائے کے وقفے کے بعد کھیل دوبارہ شروع ہوا تو کپتان کین ولیمسن اور بی جے واٹلنگ نے اپنی شراکت کی سنچری مکمل کرنے میں کامیاب ہو گئے لیکن کیویز کو اس کے فوراً بعد نقصان اٹھانا پڑا جب 176 کے مجموعی سکور پر حسن علی نے ولیمسن کو آؤٹ کر دیا جو 89 رنز بنا سکے۔

ولیمسن کے آؤٹ ہونے کے بعد پاکستان میں کھیل پر اپنی گرفت مضبوط کرنی شروع کر دی اور پہلے کولن ڈی گرانڈہوم کو 20 رنز پر اور اس کے بعد ٹم ساؤتھی دو رنز پر آؤٹ ہو گئے ۔ دونوں کھلاڑیوں کو آف سپنر بلال آصف نے آؤٹ کیا ۔

تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز 1-1 سے برابر ہے ۔ ابوظہبی میں ہی کھیلے گئے پہلے ٹیسٹ میچ میں نیوزی لینڈ نے پاکستان کو چار رنز سے شکست دی تھی جبکہ دبئی میں کھیلے گئے دوسرے ٹیسٹ میچ میں پاکستان نے ایک اننگز اور 16 رنز سے زیر کر کے سیریز برابر کر دی تھی۔

ٹیسٹ سیریز سے قبل دونوں ٹیموں کے درمیان تین ٹی 20 اور تین ہی ایک روزہ میچوں کی سیریز بھی کھیلی گئی تھی جس میں پاکستان نے نیوزی لینڈ کو ٹی 20 میچوں کی سیریز میں تین صفر سے شکست دی جبکہ ون ڈے سیریز ایک، ایک میچ سے برابر رہی تھی ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے