کینیڈین خاتون کو ہراساں کرنے والے معاف

پاکستان میں وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں پولیس نے یونیورسٹی کے دو طلبہ کو کینیڈین خاتون کا پیچھا کرنے اور ہراساں کرنے کے الزام میں گرفتار کیا تاہم معافی کے بعد رہا کر دیا گیا ۔

کینیڈین خاتون بلاگر اسما گالوتا نے شکایت کی تھی کہ بحریہ ٹاؤن میں دو نوجوانوں نے پہلے اسے گاڑی میں بیٹھنے کے لیے کہا اور بعد ازاں اس کی پرائیویٹ کمپنی ٹیکسی کار کا تعاقب کیا ۔

اسلام آباد پولیس کے سربراہ کی ہدایت پر اہلکاروں نے دو دن بعد ملزمان کو گرفتار کر لیا جس کے بعد تھانے میں خاتون بلاگر نے دونوں کو شناخت کیا ۔

پولیس کے مطابق اس دوران دونوں ملزمان کے اہل خانہ بھی تھانے پہنچ گئے ۔ ملزمان کی بہنوں اور والدہ نے کینیڈین خاتون سے معافی مانگی ۔

دونوں ملزمان نجی یونیورسٹی کے طلبہ ہیں جنہوں نے کینیڈین خاتون بلاگر اسما سے تحریری طور پر معافی طلب کی۔

دونوں کو معاف کیے جانے کے بعد تھانے سے رہا کر دیا گیا ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے