امریکی جاسوس نے 25 ہزار ڈالرز میں راز بیچ دیے

امریکہ نے اپنے خفیہ ادارے سی آئی اے کے ایک سابق جاسوس کو ملکی راز چین کو بیچنے کے الزام میں 20 قید کی سزا سنائی ہے ۔

امریکی محکمہ انصاف نے ایک بیان میں کہا ہے کہ 62 سالہ کیون مالورے نے امریکی فوج کی خفیہ معلومات چینی ایجنٹ کو فروخت کیں ۔

کیون مالورے کو جاسوسی کے متعدد الزامات کے تحت گذشتہ برس جون میں دو ہفتے کی عدالتی کارروائی سے گزارا گیا تھا جہاں ان کو مجرم ثابت کیا گیا ۔

محکمہ انصاف کے مطابق ریاست ورجینیا کے شہر لیزبرگ سے تعلق رکھنے والے کیون ماندرین زبان میں ماہر ہیں اور ان کو اعلی سطح پر سیکورٹی کلیئرنس کے بعد انتہائی حساس دستاویزت تک رسائی حاصل تھی ۔ کیون مالورے کو سزا خفیہ معلومات چین کو 25 ہزار ڈالرز میں فروخت کرنے پر سنائی گئی ۔

محکمہ اںصاف کے مطابق اس مقدمے میں ثبوت کے طور پر نگرانی کرنے والے کیمرے سے لی گئی ایک ویڈیو بھی شامل ہے جس میں کیون کو کلاسیفائیڈ دستاویزات پوسٹ آفس میں ڈیجیٹل میموری کارڈ پر سکین کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے ۔

استغاثہ نے محکمہ انصاف کے سامنے ثابت کیا کہ کیون نے مارچ اور اپریل سنہ 2017 میں چینی ایجنٹ سے ملنے کے لیے شنگھائی کا دورہ بھی کیا تھا ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے