ٹی وی چینلز آواز بند کرتے رہے

پاکستان کے سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی اور مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے صوبہ پنجاب کے شہر منڈی بہاؤالدین میں جلسہ عام سے خطاب کیا تاہم ملک کے تمام بڑے ٹی وی چینلز ان کی تقریر کے دوران مختلف اوقات میں آواز بند کرتے رہے۔

پاکستان کے معروف صحافیوں نے سوشل میڈیا پر نیوز چینلز کو بدترین سنسرشپ کا شکار قرار دیا ہے۔

مریم نواز نے اپنی تقریر میں احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کے مبینہ انکشافات پر مبنی ویڈیو کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اس گواہی کے بعد نوازشریف کی بےگناہی ثابت ہو گئی ہے۔

اتوار کو رات گئے مسلم لیگ ن کے بڑے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیراعظم کی صاحبزادی نے کہا کہ جج کی گواہی کے بعد نواز شریف کو ایک منٹ بھی جیل میں رکھنا جرم ہے۔ ’مجھے پتہ ہے آج عوام کا سیلاب آیا ہے، عوام نوازشریف کی بے گناہی ثابت ہونے کا جشن منا رہے ہیں۔‘

انہوں نے سوال کیا کہ مجھے بتائیں مہنگائی بڑھی ہے یا نہیں، بجلی کے بل زیادہ ہو گئے یا نہیں، گیس مہنگی ہوئی ہے یا نہیں، آٹا، دال، چینی اور سبزی مہنگی ہوئی ہے یا نہیں ؟جس پر عوام نے ہاں میں جواب دیا۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ آج کے بعد یہ ’نالائق اعظم اپنی نا اہلی، اپنی نالائقی کو کرپشن کے پیچھے کب تک چھپے گا۔‘ انہوں نے مطالبہ کیا کہ ’عمران خان استعفیٰ دو اور گھر جاﺅ۔

مریم نواز نے مزید کہا کہ قومی اسمبلی میں لفظ سلیکٹڈ پر پابندی لگا دی گئی ہے، ’تو کیا عوام کی زبانوں پر پابندی عائد کرو گے۔‘ مریم نے عوام سے ’گو سلیکٹڈ گو‘ کے نعرے بھی لگوائے۔

مسلم لیگ ن کی نائب صدر نے کہا کہ نوازشریف آپ جیت چکے ہو، اور عوامی عدالت کے فیصلے میں آپ کو 70سالہ تاریخ کا فاتح قرار دے دیا گیا  ہے ۔ ’شاباش منڈی بہاالدین شاباش آپ لوگ رات کو ایک بجے تک موجود ہیں۔ نوازشریف کی بیٹی کو منڈی بہاالدین پر آج فخر ہو گا۔“

ادھر حکومتی وزیر مراد سعید نے کہا کہ مریم نواز نے موٹروے پر ٹول ٹیکس نہیں دیا ان کو جرمانہ ادا کرنا ہوگا۔

منڈی بہاءالدین پہنچنے کے بعد مریم نواز نے ٹویٹ کیا کہ ‘مجھے خطاب کی جگہ پہنچے ہوئے 50 منٹ ہوگئے لیکن ہجوم کی وجہ سے میں گاڑی میں موجود ہوں’۔
ایک اور ٹوئٹ میں انہوں نے کہا کہ عوامی سیلاب نواز شریف کی بریت کا جشن منانے امڈ آیا ہے۔ سالم انٹرچینج سے اترنے کے بعد گاڑی پچھلے ایک گھنٹے سے چل نہیں پا رہی۔ عوام کا ایک سیلاب ہے۔ میں خود حیران ہوں۔‘

خیال رہے کہ انتظامیہ نے مسلم لیگ (ن) کو سنیما گراؤنڈ میں جلسے کی اجازت نہیں دی تھی گراؤنڈ کے مرکزی دروازے کو سیل اور جلسے سے روکنے کے لیے پولیس کو تعینات کردیا تھا ڈی پی او منڈی بہاءالدین کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی خدشات کے باعث ن لیگ کو جلسے کی اجازت نہیں دی۔

 مسلم لیگ (ن) نے دعویٰ کیا تھا کہ انتظامیہ نے گراؤنڈ میں پانی چھوڑ دیا جس کے بعد گراؤنڈ میں جلسے کا انتظام کرنا تقریباً ناممکن ہو چکا ہے۔ گراؤنڈ کے باہر سڑک پر اسٹیج سجایا گیا۔

متعلقہ مضامین