ناران میں فائرنگ اور جلاؤ

نعمان شاہ ۔ صحافی / مانسہرہ

پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخوا کے ضلع مانسہرہ کے سیاحتی مقام ناران کے قریب سہوچ میں زمین پر قبضہ کے تنازع میں مبینہ طور پر پی ٹی آئی کے بالاکوٹ سے ایم پی اے سید احمد شاہ کے بھانجوں کی فائرنگ سے 3 افراد شدید زخمی ہو گئے۔ زخمیوں کو مقامی ہسپتال میں طبی امداد کے بعد انتہائی تشیویشناک حالت میں ایبٹ آباد کے ایوب میڈیکل کمپلیکس ہسپتال منتقل کیا گیا۔

واقعہ کے بعد مقامی افراد نے احتجاج کرتے ہوئے مانسہرہ ناران سے براہ راستہ جھل کھڈ بابو سر ٹاپ گلگت روڈ کو پتھر پھینک کر بند کر دیا۔ اس موقع پر مظاہرین نے مخالف فریق کی تین گاڑیوں اور ایک موٹر سائیکل اور ایک زیر تعمیر ہوٹل کو آگ لگا دی۔

واقعہ کے فوری بعد ڈی پی او مانسہرہ زیب اللہ خان موقع پر پہنچے اور مظاہرین نے مذاکرات کے بعد شاہراہ ٹریفک کے لیے بحال کر دی گئی۔

ڈی پی او زیب اللہ خان کی ہدایت پر 3 افراد کو فائرنگ سے زخمی کرنے اور موقع پر فائرنگ کرنے کے خلاف پی ٹی آئی ایم پی اے سید احمد شاہ کے بھانجے سید نادر شاہ جعفر شاہ اور دو نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے جبکہ سابق ایم پی اے شازی خان کی جانب سے ان کے زیر تعمیر ہوٹل اور گاڑیاں جلانے اور شاہراہ کی بندش کا مقدمہ 50 نامزد ملزمان سمیت دیگر کئی نامعلوم ملزمان کے خلاف درج کر دیا گیا۔

ڈی پی او کے مطابق فائرنگ کا واقعہ دو مقامی فریقین کے درمیان ہوا تھا۔ ”اس دوران کیس سیاح کو کوئی نقصان نہیں پہنچا۔ پولیس سیاحوں کو مکمل تحفظ فراہم کررہی ہے۔ سیاح بلا خوف خطر آسکتے ہیں شاہر کاغان بابو سر ٹاپ تک مکمل کھولی ہوئی ہے۔“

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے