’باکسر کی پہلی شکست ہی موت کے ساتھ آئی‘

’میڈ میکس‘ کے نام سے مشہور نوجوان روسی باکسر میکسم داداشوف فائٹ کے دوران سر پر لگنے والے مکوں سے ہلاک ہوگئے ہیں۔

عالمی خبر رساں اداروں کے مطابق دادا شوف کا امریکی ریاست میری لینڈ میں فائٹ کے دوران مکوں سے دماغ ہل گیا جس کے بعد وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسے۔

روسی باکسنگ فیڈریشن کی جانب سے منگل کو میکسم داداشوف کی موت کا اعلان کیا گیا۔

روسی باکسنگ فیڈریشن کے سیکرٹری جنرل نے میکسم داداشوف کی وفات پر گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے واقعے کی تحقیقات کا اعلان کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ میکسم ہمارے ملک کا مستقبل تھا، ہم یہ جاننا چاہیں گے کہ دراصل ہوا کیا۔ شاید کسی قسم کی کوئی خلاف ورزی ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ روسی باکسنگ فیڈریشن میکسم کے اہل خانہ کی مالی امداد اور مکمل سپورٹ کرے گی۔

 روسی باکسنگ فیڈریشن کے مطابق میکسم داداشوف کو پورٹوریکو کے 27 سالہ باکسر سبریئل میٹیئس کے ساتھ باؤٹ کے دوران شدید دماغی چوٹیں آئیں۔

28 سالہ میکسم نے پیشہ وارانہ باکسنگ کا آغاز 2016 میں کیا تھا اور انہوں نے کل 14 مقابلوں میں حصہ لیا جن میں انہوں نے شاندار کارکردگی دکھاتے ہوئے 13 میں کامیابی حاصل کی۔ میکسم نے جیتے گئے 13 میں سے 11 مقابلوں میں اپنے حریفوں کو ناک آؤٹ کیا جبکہ صرف ہی ایک میچ میں انہیں شکست کا سامنا کرنا پڑا جو ان کی زندگی کا بھی آخری میچ ثابت ہوا۔

جمعے کے روز ہونے والی سپر لائٹ ویٹ کی یہ باؤٹ گیارہویں راؤنڈ کے بعد ہی روک دی گئی تھی۔ اس طرح میکسم داداشوف تکنیکی بنیادوں پر اپنے حریف سے شکست کھا گئے۔

میکسم کے ٹرینر میک گرٹ نے مخالف باکسر کے زبردست پنچ دیکھتے ہوئے ’میڈ میکس‘ کو فائٹ روکنے کے لیے قائل کرنے کی کوشش کی مگر وہ نہ مانے۔

فائٹ روکے جانے کے بعد روسی باکسر کو فوری طور پر ہسپتال پہنچایا گیا جہاں ان کے دماغ کی ہنگامی سرجری کی گئی۔ وہ کومہ کی حالت میں منگل تک ہسپتال میں ہی زیرعلاج رہے۔

ڈاکٹروں نے میکسم کو دماغ کی سوجن کے دباؤ اور درد سے نکالنے کے لیے آپریشن کیا لیکن وہ جانبر نہ ہو سکے اور صرف 28 برس کی عمر میں ہی دنیا سے چلے گئے۔ یاد رہے کہ  میکسم 30 ستمبر 1990 کو سینٹ پیٹرز برگ روس میں پیدا ہوئے تھے تاہم وہ امریکہ میں رہائش پذیر تھے۔

متعلقہ مضامین