وزیراعظم نے ریڈ لیٹر جاری کر دیا

پاکستانی وزیراعظم کے دفتر نے27 وزارتوں کے سیکرٹریوں کو ریڈ لیٹر جاری کیا ہے۔ ریکارڈ کی عدم فراہمی پر وزیراعظم آفس نے وزارتوں کو ریڈ لیٹر جاری کیا۔

وزیراعظم آفس سے حالیہ تاریخ میں پہلی مرتبہ ریڈ لیٹر جاری ہوا۔ ریڈ لیٹر آخری وارننگ اور ناپسندیدگی کی علامت ہے۔

وزیراعظم آفس نے وزارتوں سے خالی آسامیوں اور بھرتیوں سے متعلق تفصیلات طلب کی تھیں۔

اب وزیراعظم کے دفتر نے تفصیلات فراہم کرنے کے لیے 9 ستمبر کی آخری ڈیڈلائن دے دی ہے۔

ریڈلیٹر وزارتوں کی کارکردگی رپورٹ پر اثر ڈالے گا۔ خط میں کہا گیا ہے کہ وزارتیں ہر سطح پر خالی آسامیوں سے متعلق رپورٹ جمع کرائیں۔

”پروموشن کے اہل ہونے کے باوجود پروموشن نہ ملنے والے افسران کی تفصیل فراہم کی جائے۔ جن سرکاری ملازمین کے خلاف انضباطی کارروائی تین ماہ سے زیر التوا ہے انکی تفصیلات بھی فراہم کی جائیں۔“

وزارتوں کے پاس موجود متروکہ شدہ گاڑیوں، مشینری اور دیگر سازوسامان کی تفصیلات بھی دی جائیں۔

متعلقہ مضامین