جج ویڈیو سکینڈل میں گرفتاریاں

پاکستان میں گندی ویڈیو سے بلیک میل ہونے والے جج ارشد ملک کے کیس میں تفتیشی ادارے ایف آئی اے نے راولپنڈی شہر میں چھاپے کے دوران مسلم لیگی کارکن ناصر بٹ کے بھتیجے اور قریبی عزیز کو گرفتار کیا ہے۔

راولپنڈی سے صحافی یاسر حکیم کے مطابق جج ارشد ملک ویڈیو سکینڈل میں ایف آئی اے حکام نے رتہ امرال کے علاقے میں ناصر بٹ کے بھائی کے گھر پر چھاپہ مارا اور ان کے بھتیجےحمزہ بٹ اور قریبی عزیز،شعیب کو حراست میں لیا۔

حمزہ بٹ اور شعیب کو ایف آئی اے ہیڈ کوارٹر اسلام آباد منتقل کیا گیا ہے۔

زیر حراست حمزہ بٹ لیگی رہنماء ناصر بٹ کے مقتول بھائی عارف کا بیٹا ہے۔ ناصر بٹ کے چھوٹے بھائی حافظ عبداللہ بٹ نے چھاپے کی تصدیق کی ہے

حافظ عبداللہ نے بتایا کہ ایف آئی اے اہلکار گھر میں گھس کر بار بار لیپ ٹاپ کا پوچھتے رہے۔

حافظ عبداللہ کے مطابق ایف آئی اے اہلکاروں کو بتایا اس کیس سے ہمارا کوئی تعلق نہیں، ایف آئی اے اہلکاروں کو بتایا ویڈیو سکینڈل ناصر بٹ اور اسکی پارٹی کا معاملہ ہے۔

حافظ عبداللہ بٹ نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ ایف آئی اے اہلکاروں نے بتایا کہ زیر حراست دونوں لڑکوں کو صبح عدالت پیش کر دیں گے۔

خیال رہے کہ اس مقدمے میں عدالت تین ملزمان کو بری کر چکی ہے جس کے بعد ایف آئی اے کے ڈی جی بشیر میمن کو طویل رخصت پر بھیجا گیا۔

متعلقہ مضامین