حکومت مخالف جنگ جاری رکھنے کا اعلان

پاکستان میں حکومت مخالف تحریک چلانے والی پارٹی جمیعت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے اسلام آباد میں دھرنا دینے والوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ حکومت اور نظام کے خلاف جنگ جاری رہے گی۔

آئندہ کے لائحہ عمل کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ تمام اپوزیشن جماعتیں رابطہ میں ہیں اور آئندہ کی حکمت عملی پر مشاورت کی جارہی ہے۔ آئندہ کی حکمت عملی کا فیصلہ قیادت کرے گی اور ہم اپنے مؤقف پر ڈٹے رہیں گے۔ 

مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ غرور کا پہاڑ ریت کا صحرا بن گیا ہے اور ان حکمرانوں کا غرور خاک میں ملا دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ”ہم ان حکمرانوں کو تسلیم نہیں کرتے، یہ کرسی پر بیٹھے رہیں لیکن عوام انہیں حکمران نہیں مانتی۔“

جے یو آئی کے سربراہ نے کہا کہ ملکی معیشت تباہ ہو چکی ہے ’ایک سال کے اندر چاول کی پیداوار میں تیس سے چالیس فیصد کمی آئی ہے، کپاس کی پیدواری ہدف 8 فیصد بمشکل حاصل کیا ہے اور وزیراعظم کی زرعی ایمرجنسی کمیٹی میں کپاس موضوع ہی نہیں ہے۔‘

مولانا فضل الرحمان نے موجودہ حالات میں کرتارپور راہداری کھولنے پر بھی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

متعلقہ مضامین