بلاول بھٹو کو مولانا کے پلان سے اختلاف کیوں؟

پاکستان میں حزب اختلاف کی جماعت پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ ان کی پارٹی حکومت مخالف تحریک کے دوسرے مرحلے میں مولانا فضل الرحمان کے سول نافرنانی پلان کی حمایت نہیں کرتی۔

اسلام آباد میں پیپلز پارٹی کی کور کمیٹی اجلاس کے بعد بلاول بھٹو نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان نے پیپلز پارٹی کو اپنے ’پلان بی‘ اور ’پلان سی‘ کی تفصیلات سے آگاہ نہیں کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ مولانا نے نہ ق لیگ اور چودھری برادران سے کی گئی ملاقاتوں پر ان کا اعتماد میں نہیں لیا۔

پیپلز پارٹی کے چیئرمین کا کہنا تھا کہ مولانا کا آزادی مارچ کامیاب رہا، اس مارچ کے نتیجے میں وزیراعظم کے ہٹنے کے امکانات بڑھے ہیں اور میڈیا پر عائد سینسر شپ بھی ٹوٹی ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ اب سلیکٹڈ وزیراعظم کو جانا پڑے گا اور آئندہ سال نیا وزیراعظم ہو گا۔

متعلقہ مضامین