مفرور مشرف کی جائیداد قرقی، تفتیشی افسر کے وارنٹ جاری

پاکستان کی سابق وزیراعظم بے نظیربھٹو کے قتل کیس میں ملزم پرویز مشرف کی نئی جائیدادوں کی تفصیلات پیش نہ کرنے پر انسداد دہشتگردی عدالت نے مقدمے کے تفتیشی آفیسر کے وارنٹ گرفتاری جاری کر دیے ہیں۔

پیر کو راولپنڈی میں سابق وزیراعظم کے قتل کیس کی سماعت انسداد دہشتگردی عدالت کے جج شوکت کمال ڈار نے کی۔ سماعت کے دوران مقدمے کے تفتیشی آفیسر انسپکٹر عظمت عدالت پیش نہ ہوئے جس پر عدالت نے برہمی کا اظہار کیا اور انسپکٹر ایف آئی اے عظمت کے وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے انھیں نو دسمبر کو عدالت میں پیش کرنے کی ہدایت کی۔

سماعت کے دوران ایف آئی اے کی جانب سے ملزم پرویز مشرف کی سامنے آنے والی نئی جائیدادوں کی تفصیلات عدالت پیش نہ کی گئیں،عدالت نے استغاثہ کو ہدایت کی کہ آئندہ سماعت پر ملزم کی جائیدادوں کی مکمل تفصیلات عدالت پیش کی جائیں۔

یاد رہے کہ یہ مقدمہ دس سال سے زیر سماعت ہے اور مشرف کو مفرور قرار دیا جا چکا ہے جس کے بعد ان کی جائیداد قرقی کے لیے کارروائی جاری ہے تاہم تفتیشی ادارے دو سال سے ملزم کے اکاؤنٹس اور جائیداد کی مکمل تفصیلات عدالت کو فراہم کرنے میں ناکام ہیں۔

متعلقہ مضامین