قومی اسمبلی میں بلوچ خواتین کے لیے دھرنا

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے ضلع آؤاران میں چار خواتین کو لاپتہ کیے جانے کے واقعے پر حکومت کی اتحادی جماعت بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل نے سپیکر ڈائس کے سامنے دھرنا دیا ہے۔

قومی اسمبلی کے رکن آغا حسن بلوچ نے کہا کہ جب لاپتہ افراد گھروں کو لوٹ رہے تھے تو ایسے میں آواران میں چار بلوچ خواتین کو لاپتہ کر دیا گیا۔

آغا حسن بلوچ کا کہنا تھا کہ ان کی پارٹی چار خواتین کو لاپتہ کرنے کے واقعہ کے خلاف احتجاج کرتی ہے۔ اس موقع پر ڈپٹی سپیکر قاسم سوری نے کہا کہ ”بلوچستان کا مسئلہ ہم سب کا مسئلہ ہے میں بھی آپ کے ساتھ ہوں۔“

متعلقہ مضامین