جسٹس صدیقی کرپشن ریفرنس کھلی سماعت

اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس شوکت عزیز صدیقی کے خلاف اختیارات سے تجاوز اور کرپشن کے الزامات پر ریفرنس کی کھلی سماعت کی منظوری دے دی گئی ہے ۔ ذرائع کے مطابق اعلی عدلیہ کے ججوں کا احتساب کرنے والے فورم سپریم جوڈیشل کونسل نے یہ منظوری آج ساڑھے گیارہ بجے ہونے والی کارروائی میں دی ۔

جسٹس صدیقی کے خلاف یہ ریفرنس ۲۰۱۵ میں دائر کیا گیا تھا اور ان پر الزام ہے کہ سرکاری گھر کی تزئین و آرائش پر ۸۰ لاکھ روپے خزانے سے خرچ کرائے جس کے وہ مجاز نہ تھے ۔

جسٹس صدیقی نے درخواست کی تھی کہ ان کا ٹرائل کھلی عدالت میں میڈیا کے سامنے کیا جا ئے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے