نیب جج بشیر کے پاس نہیں جانا چاہتا

قومی احتساب بیورو نیب نے ایک بار پھر سپریم کورٹ سے رجوع کیا ہے تاہم اس بار نواز شریف کے خلاف اپنی درخواست واپس لینے کیلئے نئی درخواست دی ہے ۔ نیب کی نئی درخواست کے مطابق نواز شریف کے بقیہ دونوں ریفرنس اب جج محمد بشیر کو منتقل کرنے کی ضرورت نہیں ۔

قومی احتساب بیورو نیب نے نواز شریف کے خلاف فلیگ شپ اور العزیزیہ ریفرنسز کی واپس جج محمد بشیر کی عدالت میں منتقلی کیلئے دائر اپنی ہی درخواست واپس لینے کا فیصلہ کیا ہے ۔ عدالت عظمی میں دائر کی گئی درخواست میں نیب نے کہا ہے کہ ہائیکورٹ فیصلے کے خلاف ہماری اپیل کل سماعت کیلئے مقرر ہے، اپیل کا مقصد احتساب عدالت میں ٹرائل کو جلد نمٹانا تھا، ہائیکورٹ کے فیصلے کے بعد دوسری احتساب عدالت میں بھی ٹرائل تقریباً تکمیل تک پہنچ چکا ہے ۔

نیب نے درخواست میں کہا ہے کہ سپریم کورٹ نے احتساب عدالت نمبر 2 کو ٹرائل مکمل کرنے کے لیے 6 ہفتوں کا وقت دے رکھا ہے، ٹرائل کی جلد تکمیل کے لیے اپیل واپس لینا چاہتے ہیں، غیر مشروط طور پر درخواست واپس لینے کی اجازت دی جائے ۔

یاد رہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے نواز شریف کی درخواست پر ان کے بقیہ ریفرنس جج محمد بشیر کی عدالت سے دوسری عدالت منتقل کرنے کا حکم دیا تھا جس کو نیب نے عدالت عظمی میں چیلنج کر رکھا ہے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے