مراد علی شاہ نے بھی درخواست کر دی

جعلی بینک اکاؤنٹس کیس فیصلے پر نظرثانی درخواست کی جلد سماعت کیلئے آصف علی زرداری نے سپریم کورٹ سے رجوع کر لیا جبکہ وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کی ہے کہ فیصلے پر نظر ثانی کی جائے کیونکہ شوگرملز کو سبسڈی دینے کی قرارداد سندھ اسمبلی نے منظورکی، جے آئی ٹی رپورٹ سے میرا نام نکالنے کے زبانی حکم کو تحریری فیصلے میں شامل نہیں کیا گیا ۔
آصف علی زرداری نے نظرثانی درخواست کی سماعت 12 فروری کیلئے مقررکرنے کی استدعا کی ہے ۔ آصف زرداری نے سپریم کورٹ میں نظرثانی درخواست کی جلد سماعت کیلئے ایڈووکیٹ لطیف کھوسہ کے ذریعے استدعا کی ہے ۔

جلد سماعت کی درخواست میں نظرثانی درخواست کو 12 فروری کے دن مقرر کرنے کی استدعا کی گئی ہے ۔ درخواست میں موقف اپنایا گیا کہ نیب کی جانب سے جعلی اکاونٹس معاملے کی کاروائی کا سامنا ہے، موکل الزامات ثابت ہونے تک معصوم ہے اور انہیں بنیادی حقوق سے محروم نہیں رکھا جا سکتا ۔

وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے بھی سپریم کورٹ کے فیصلے کےخلاف نظرثانی درخواست دائر کی ہے جس میں وفاق، نیب اور جے آئی ٹی کو فریق بناتے ہوئے کہا گیا کہ سندھ اسمبلی میں شوگرملز کو سبسڈی کی قرارداد تحریک انصاف کے خرم شیرزمان نے پیش کی تھی، اسمبلی نے سبسڈی دینے کی منظوردی تھی ۔

مراد علی شاہ کی درخواست میں کہا گیا ہے کہ جے آئی ٹی جعلی اکاونٹس ٹرانزیکشنز ثابت نہ کرسکی، مقدمے کی کراچی سے اسلام آباد منتقلی اور عمل درآمد بینچ کی تشکیل کا جواز نہیں ۔ تحریری فیصلے میں جے آئی ٹی رپورٹ سے نام نکالنے کے زبانی حکم کو شامل نہیں کیا گیا ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button