مشرف کیس میں جج ہی نہ آئے

پاکستان میں سابق فوجی صدر پرویز مشرف کے خلاف آئین توڑنے پر قائم کیے گئے سنگین غداری کے مقدمے کی سماعت اسلام آباد کی خصوصی عدالت میں ججوں کے نہ آنے پر ملتوی کر دی گئی۔

خیال رہے کہ یہ مقدمہ ساڑھے پانچ برس سے زیر التوا ہے اور دو ماہ قبل سپریم کورٹ نے آرٹیکل چھ کے تحت درج کیے گئے اس مقدمے کو جلد منطقی انجام تک پہنچانے کا حکم دیا تھا۔

پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کے مقدمے میں ملزم کی مسلسل عدم حاضری پر عدالت نے اسے مفرور قرار دیا تھا اور اس کے وکیل کے دفاع کے حق کو ختم کر دیا تھا۔

گذشتہ سماعت پر خصوصی عدالت نے وزارت قانون کو ہدایت کی تھی کہ وہ مشرف کے لیے سرکاری وکیل فراہم کر کے اس کے نام اور فیس کی تفصیلات سے آگاہ کرے۔

عدالت نے پرویز مشرف کی بریت کی درخواست کو ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے خارج کیا تھا جبکہ سابق صدر کی مقدمے کو ملتوی کرنے کی درخواست بھی مسترد کردی گئی تھی۔

متعلقہ مضامین